ارم میری پیاری بہن

4.7
(3)

Loading

اسلام و علیکم دوستو

سب سے پہلے میں آپ کو اپنی فیملی کے بارے میں بتا دوں..

میں اس وقت پانچویں کلاس میں پڑھتا تھا اور میری عمر 9 سال تھی.ارم مجھ سے 2 سال چھوٹی بہن تھی..اور اس کے بعد ایک بھائی تھا..فی الحال ہم 3 بہن بھائی تھے اور امی اس وقت حاملہ تھی چوتھے پچے کے لیے.میرے ابو دوسرے شہر میں کام کرتے تھے..چونکہ امی حاملہ تھی اور ابو گھر نہیں تھے ہوتے تو ہم سب بہن بھائی انجواۓ کرتے اور ساتھ محلے کے بچے بھی آجاتے اور ہم رات ک وقت گھر میں چھپن چھپائی کھیلتے.

ایک دن ہم رات کے وقت کھیل رہے تھےکچھ محلے کے بچے تھے اور ارم تھی اور میں تھا..تب میں کہا کہ آج ڈاکٹرڈاکٹر کھیلتے ہیں.میں ان سب کو مریض بناتا اور ان کو ننگا کر کے الٹا لٹا کر گانڈ ننگی کرتا اور اپنی للی نکال کر اس میں رگڑتا اور کہتا کہ ٹیکا لگ رہا ہے..ہم اسی طرح کھیلتے رہتے اور وہ بچے چلے جاتے لیکن میں اور ارم کھیلتے رہتے..میں ارم کو ننگی کرتا تب ارم کی پھدی بالکل چھوٹی سی تھی اور اس پھدی میں للی رگڑتا اور کبھی ارم مجھے نیچے لٹا کر میری للی پر اپنی ننھی سی پھدی ننگی کر کے رکھ کر اپنے ھاتھ سے پکڑ کر مسلتی میری للی پر اور کہتی ٹیکا لگ رہا ہے..حالانکہ دونوں صورتوں ٹیکہ ارم کو ہی لگتا تھا.ہاہاہا.

جب بھی میں ارم کی ننھی سی پھدی میں للی مسلتا ایک عجیب سا مزا آتا اور ظاہر ہے ارم کو بھی مزا آتا اور وہ کھیلتی رہتی…ہمیں جب بھی موقع ملتا ہم ایسے کھیلتے..اسی طرح ارم بڑی ہوتی گئی. میری امی حاملہ تھی اور انہوں نے بچہ پیدا کیا تھا نارمل ڈلیوری سے..ادھر ہماری فیملی مکلمل ہو جاتی ہے.اور امی کی عمر 26 سال تھی.بہت چھوٹی عمر میں شادی ہوئی امی کی اور 2،2 سال کے وقفے سے 4 بچے دییے امی نے اور ابو بیمار ہوۓ اور فوت ہو گئے..امی ابھی جوان تھی…

ارم کی عمر اب 10 سال تھی اور میں 12 سال کا ہو چکا تھا.ہم چھوٹے بھائی کیساتھ کھیلتے اور رات کے وقت امی کے بچہ دینے کی وجہ سے میں اور ارم ایک ہی بستر پر سوتےاور جب سب سو جاتے تب میں ارم کو گانڈ پر چھیڑتا اور ارم ساتھ دیتی اور میں شلوار اتار کر ارم کی گانڈ کی موری میں تھوک لگاتا اور لن پر تھوک لگاتا اور لن کی ٹوپی ارم کی گانڈ کی موری میں رگڑتااور تھوک زیادہ ہونے کی وجہ سے لن گانڈ سے پھسل کر پھدی کی لائن میں بھی رگڑتا.تب ایک عجیب سا سرور آتا اور ارم کی گانڈ کی موری پر جب لن کی ٹوپی لگتی تو ارم اپنی گانڈ کی موری کبھی ٹائٹ کرتی کبھہ نارمل جو مجھے لن رگڑنے میں بہت مزا دیتی..اور جس انگلی سے میں ارم کی گانڈ میں تھوک لگاتا اس انگلی سے بہت مزیدار خوشبو آتی. اسی طرح کرتے لن کا پانی تو نہ نکلتا کیونکہ ہم چھوٹے تھے ابھی لیکن مزا آتا اور ہم سو جاتے.ارم کی گانڈ اور پھدی میں لن رگڑتے ایک عرصہ ہو گیا لیکن ارم نے کبھی امی کو نہیں بتایا کہ بھائی ایسا کرتے ہیں.

..

ارم آٹھویں کلاس میں تھی اب اور میں میٹرک میں تھا..اب ارم بڑی ہو گئی تھی اب مجھ سے شرماتی تھی اور جاگتے ہوئے نہیں تھی کرواتی اور جب بھی میرا دل کرتا میں بہانے بہانے سے ارم کی گانڈ پر ھاتھ پھیرتا تو اسے پتہ چل جاتا کہ بھائی میری کنواری پھدی اور گانڈ سے مزا کرنا چاہ رہا ہے تو ارم بہانے سے کمرے میں جا کر لیٹ جاتی اور سونے کا ناٹک کرتی..ناٹک اس لیے کیونکہ 5 منٹ بعد جا کر میں شروع ہو جاتا اور وہ ساتھ دیتی….

اب میرے لن کا پانی نکلنا بھی شروع ہو چکا تھا اور میری سگی بہن کی پھدی نے بھی پانی چھوڑنا شروع کر دیا تھا.اور میں کلاس کے لڑکوں سے کافی کچھ سیکھ رہا تھا اور وہ ارم پر اپلائی کرتا.ہاہاہا.

گرمیوں کے دن تھےمیں اور ارم چھوٹے بھائی سے کھیل رہےتھے اور کھیل کے دوران بار بار میں ارم کی گانڈ پر ھاتھ پھیرتا اور ارم گھوڑی بن کر بھائی کو کھیلاتی.میں بھائی کو ارم کے اوپر بیٹھاتا اور خود ارم کی گانڈ کے پیچھے آ جاتا اور ارم آگے سے گھوڑی بن کر چلتی جس سے ارم کی گانڈ کک لائن کھل جاتی اور میں جان بوجھ کر ارم کی گانڈ کی کھلی لائن میں لن لگاتا.ارم سمجھ گئی اور بھائی کو امی کو دے کر کہا مجھے نیند آرہی ہے اور بھائی کے لیے دوسرے کمرے میں چلی گئی.

5 منٹ کے بعد میں بھی چلا گیا تو ارم کروٹ لے کر لیٹی تھی کپڑا اوپر لیکر.

میں اپنی سگی بہن کیساتھ لیٹ گیا اور دایاں ہاتھ ارم کی گانڈ پر رکھااور ہاتھ رکھتے ہی ارم کے کنوارے جسم سے ایک کرنٹ لگی اور میرا لن کھڑا ہو گیا لیکن ارم بلکل نہیں ہلی.میں پہلے ارم کی گانڈ اوپر سے مسلنی شروع کی اور پھر آہستہ آہستہ اپنا ہاتھ ارم کی شلوار میں ڈالنا شروع کر دیا.جب میں ہاتھ ارم کی شلوار میں ڈالا تو ارم کی ننگی گانڈ پر ھاتھ رکھتے ہی میرے لن نے جھٹکے لینے شروع کر دییے ادھر ارم کی گانڈ کے رونگٹے کھڑے ہوتے میں اپنے ہاتھ پر محسوس کر رہا تھا…رونگٹے کھڑےتب ہوتے ہیں جب انسان جاگ رہا ہو اور مزا محسوس کرے..لیکن میں بھی نہیں تھا اسے محسوس کرواتا کہہ تم جاگ رہی ہو..

ارم کروٹ لیکر لیٹی تھی تو اس پوز میں ارم کی گانڈ کی لائن کھلی ہوئی تھی اورمیں ارم کی شلوار کے اندر سے ارم کی گانڈ کی لائن میں انگلی مسلنی شروع کر دی.ارم کی گانڈ کی چھوٹی سی ٹائٹ موری تھی.جب میں گانڈ کی موری پر انگلی مارتا تو ارم موری کبھی بند کرتی کبھی کھولتی اور مجھے مزا آتا.

اب میں ارم کی شلوار نیچے کر کے پوری گانڈ ننگی کر دی اور اپنی سگی بہن کی کنواری گانڈ کی لائن میں میں منہ رکھ کر گانڈ کی خوشبو سونگھی جو مجھے بیحد سیکسی اور مزے کی لگی.پھر میں ہاتھ پر تھوک لگا کر ارم کی گانڈ کی موری پر لگایا جسے لگاتے ہی ارم نے اچانک موری بند کی.تب میں اپنا لن اپنی سگی بہن کی گیلی گانڈ کی لائن میں رکھ کر پوری لائن میں مسلنہ شروع کیا آھ آھ آھ آھ آھ آھ…مجھے بہت مزا آرہا تھا اس دوران میرا لن بہت دفعہ گانڈ سے پھسل کر ارم کی کنواری پھدی کی لائن میں جاتا جو مجھے گیلی گیلی لگتی اور لن لگتے ہی ایسا لگتا جیسے کتنا مزا آ رہا ہے.کچھ دیر ایسے کرنے کے بعد میں ارم کے کان میں ہلکا سا کہا کہہ کاش تمہاری اوپر والی ٹانگ تھوڑی آگے ہوتی تو مزاآجاتا..تبھی ارم نے سونے کا ناٹک کرتے ہوئے اوپر والی ٹانگ آگے کر لی جس سے پھدی نظرآنے لگی.میں اپنا دایاں ہاتھ ارم کی پھدی پر رکھا جو کافی گیلی تھی جس سے لگ رہا تھا ایک بہن اپنے سگے بھائی کے لن سے مزا لے کر پھدی کا پانی چھوڑ چکی ہے..

میں پھدی پر ہاتھ رکھا تو مجھے ارم کی کنواری پھدی پر ہلکھ ہلکے بال محسوس ہوئے جو ابھی آ رہے تھے.میں ارم کی پھدی کے چھوٹے چھوٹے بالوں کوانگلیوں میں پکڑ کر مسلنہ شروع کیا جو کہہ بہت سکون دینے والی چیز تھی.اب میں ارم کی گیلی پھدی کی لائن ایک انگلی سے مسلنہ شروع کر دی اور پھدی کی لائن مسلنے کے دوران مجھے اپنی سگی بہن کی کنواری پھدی کے چھوٹے چھوٹےہونٹ اور چھوٹی سی پھدی کی موری محسوس ہو رہی تھی…ارم کی پھدی چونکہ گیلی تھی تو میرا دل کیا اسے چکھنے کو تو میں ارم کے دونوں پٹ تھورے کھول کر اپنی زبان اپنی سگی بہن کی پھدی میں رکھ دی.افففففففففففففف میں بتا نہیں سکتا میری بہن کی پھدی کی خوشبو کتنی مزیدار تھی اور اعم کی پھدی کا پانی گرم اور نمکین تھا..میں ارم کی پھدی کا نمکین پانی چاٹ رہا تھا اور ارم اپنی گانڈ ہلا رہی تھی ہلکی ہلکی لیکن وہ لیٹی رہی..اب میں کچھ دیر ارم کی پھدی چاٹنے کے بعد ارم کی پھدی کا پانی انگلی پر لگا کر ارم کی گانڈ کی موری پر لگایا اور دوبارہ لن ارم کی گانڈ کی موری سے پھدی کی موری تک رگڑنے لگا.اور جب بھی لن کی ٹوپی ارم کی گانڈ کی موری پر لگتی تو ارم اپنی گانڈ کو پیچھے کو زور لگاتی تا کہ بھائی کا لن اس کی گانڈ کی موری میں چلا جائے لیکن میں ڈرتا تھا کہہ دوسرے کمرے میں امی ہیں اور لن اندر جاتے ہی اس سیکسی بہن نے رو پڑنا ہے اور میں پکڑا جاؤں گا.اس لیے میں اندر نہیں ڈالا اور رگڑتا رہا اور کافی دیر ایسا کرتے مجھے لگا میرا پانی نکلنے والا ہے تو میں لن رگڑنے کی سپیڈ تیز کی اور لن کا گاڑھا پانی اپنی سگی بہن کی پھدی کی لائن اور گانڈ کی لائن میں نکال دیا اور لن باہر نکال کر شلوار اوپر کی اور باہر آ گیا.اور وہ بہن جو سونے کا ناٹک کر رہی تھی وہ بھی 2 منٹ بعد اٹھ کر باہر آگئی اور واش روم بھی نہیں گئی اسی طرح گاڑھے لن کے پانی سے بھری پھدی لیکر پھرتی رہی…

میں اپنے لین کا پانی اپنی بہن کی کنواری پھدی میں نکال دیا اور ارم کی پھدی نے بھی پانی چھوڑا ہوا تھا اور اس طرح ارم کی پھدی کی لائن میں کافی پانی تھا جسے صاف کییے بغیر ارم شلوار اوپر کر کے باہر آ گئی اور ارم کی پھدی والی جگی سے شلوار فل گیلی واضح نظر آرہی تھی جسے میری امی نے دیکھ لیا…امی کو پتہ تھا کہہ ہم دونوں کمرے میں تھے اور پہلے میں باہر آیا اور پھر ارم تو امی نے میری طرف بہت غصے سے دیکھالیکن کچھ کہا نہیں.شائد امی کو پتہ چل چکا تھا کہہ ارم اپنے سگے بھائی کے لن کے نیچے تھی.چونکہ امی نے ابھی کچھ دن پہلے ہی بچہ دیہ تھا اور بچہ بھی پھدی کی موری سے نکلوایا تھا اور یہ چوتھا بچہ تھا جو امی نے دیا اس لیے امی کا تجربہ تھا جو وہ یہ سب سمجھ گئی لیکن چپ رہی.

کچھ دن بعد دوبارہ میری سگی بہن کی پھدی اور گانڈ کی گرمی اسے میرے پاس لے آئی تھی..اور میں اپنی سگی بہن ننگی کر کہہ دیوانوں کی طرح اپنی بہن کی پھدی اور گانڈ چاٹ رہا تھا اور اپنی بہن کی کنواری پھدی سے نکلنے والا لیس دار گاڑھا اور نمکین پانی اپنی زبان سے چاٹ رہا تھا کہہ اچانک مجھے لگا جیسے زبان پر کچھ اور چیز لگی.. میں اپنی بہن کی ٹانگوں سے منہ نکال کر دیکھا تو میری بہن ارم کی پھدی سے خون نکل رہا تھا..میں ڈر گیا اور جلدی سے ارم کے کان میں کہا تمہاری پھدی سے خون نکل رہا ہےاور میں شلوار پہن کر باہر چلا گیا اور ساتھ ہی ارم بھی اٹھی اور امی کی طرف گئی..میں بھی کھڑکی میں کھڑا ہو کر دیکھنے لگا کہہ امی کیا کہتے ہیں لیکن امی کو جب ارم نے بتایا کہہ اس کی پھدی سے خون نکل رہا ہے تو امی مسکرائی اور ارم کو پاس بلایا اور اس کی شلوار نیچے کر کے ارم کی پھدی دیکھنے لگی اور مسکرا رہی تھی جس کی مجھے تب سمجھ نہ آئی لیکن پھر امی نے ارم کی پھدی پر پیڈ رکھا اور انڈرویئر پہنایا تب مجھے سمجھ آئی کہہ آج میری بہن پوری طرح سے جوان ہو گئی ہے.اب ارم کے مینسز کے دن شروع ہو گیۓ تھے…پھر کچھ دن بعد میں اور ارم کھیل رہے تھے اور ارم مینسز میں ہی تھی کہہ امی نے ارم کو کہہ میری بات سنو..میں بھی ساتھ چلا گیا تو امی نے مجھے کمرے سے باہر جانے کو کہا تو مجھے شک پڑا کہہ پھر شائد ارم کی پھدی دیکھنے لگی ہیں اور میں کھڑکی پرآگیا..لیکن اس دفعہ امی اپنی جاون کنواری بیٹی کو بالصفا پاؤڈر دیا (تب ہم گاؤں میں رہتے تھے اور وہاں عورتیں اور امی بھی اپنی پھدی کے بال بالصفا پاؤڈر سے صاف کرتی تھی) امی نے جب ارم کو بالصفا پاؤڈر دیااور سمجھایا بال صاف کرنے کے بارے میں لیکن ارم کوشائد سمجھ نہ آئی کہہ اسے استمعال کیسے کرنا ہے.تب امی کھڑی ہوئی اور اپنی شلوار نیچے کی.اففففففففففففففففففف پہلی دفعہ میں اپنی امی کی پھدی دیکھی جس سے تھوڑے دن پہلے میری امی نے بچہ نکلوایا تھا…امی کھڑی تھی اس لیے امی کی پھدی کی موری نظر نہیں آئی لیکن امی کی پھدی کے لمبے ہونٹ نظر آرہے تھے جو بڑے تھے اور زیادہ نہیں لیکن لٹک رہے تھے..امی کی پھدی پر بال تھے جن پر ہاتھ لگا کر ارم کہ بتایا کہہ ایسے بالصفا پاؤڈر استمعال کرنا ہے.ارم باہر آگئی.اور پھر ارم نہائی اور اپنی پھدی کے بال صاف کییے جو اب جوان ہو چکی تھی..جب ارم نہا کر نکلی تو بہت خوش تھی کیونکہ وہ اپنی پھدی پہلے مینسز کے بعد صاف کر کے آئی تھی…میں باہر بیٹھا ارم کا انتظار کر رہا تھا اور میرا لن کھڑا تھا جسے ارم نے باہر آتے ہی دیکھا اور مسکرائی..شائد میری بہن بھی جوان ہونے کے بعد اپنی صاف پھدی اپنے بھائی کو دکھانے کے لیے بیتاب تھی.کیونکہ جب ارم کو مینسز آۓ تھے تب ارم کی پھدی چاٹنی درمیان میں چھوڑ دی تھی…ارم بھی میری طرح بےچین تھی کہہ نہاتے ہی سونے آ گئی اور میں اہنی بہن کو لیٹتے ہی ننگا کر لیا..اففففففففففففف بال صاف کرنے کے بعد میری بہن کی پھدی کمال لگ رہی تھی..میں پاگلوں کی طرح اپنی بہن کی پھدی پر حملہ کیا اور چاٹنی شروع کر دی..آج ارم کافی دن بعد پھدی چٹوا رہی تھی اس لیے چاٹنے کے 2 منٹ بعد ہی پھدی نے پانی چھوڑ دیا جو میں چاٹ لیا..پانی چاٹ کر ایسا نشہ ہوا کہہ میں ارم کی پھدی انگلی سے مسلنی شروع کی اور تیز تیز انگلی مسلتے ہوۓ میری انگلی ارم کی پھدی کی چھوٹی سی موری میں چلی گئی اور موری میں انگلی جاتے ہی ارم یک دم آہ کیا اور میں انگلی نکال لی اور پھر میں ارم کی پھدی میں لن رگڑنا شروع کیا. ارم کی پھدی کی موری بہت ٹائیٹ تھی اسی لیے انگلی جاتے ہی ارم کو درد ہوئی لیکن وہ اپنے بھائی کے نیچے سے ہلی نہیں.ہاہاہاہاہا..آج ارم کی پھدی سے بالصفا پاؤڈر اور پھدی کی خوشبو مکس ہو کر آرہی تھی جو میرے لن کو مزید ٹائٹ کر رہی تھی…میں ارم کی گانڈ کی موری سے لیکر ارم کی پھدی کی موری تک لن رگڑ رہا تھا اور ہر دفعہ جب بھی لن ارم کی گانڈ کی موری پر جاتا ارم پیچھے کو زور لگاتی لیکن میں موقع دیکھ ک اندر ڈالنا تھا سو لن رگڑتا رہا اور اپنی سگی بہن کی کنواری چوت اور گانڈ کی لائن میں پانی نکالا اور اٹھ گیا اور اٹھتے ہوئے ارم کے کان میں کہا کہہ واش کر کے آنا پچھلی دفعہ امی کو شک ہو گیا تھا…ارم بعد میں آئی تو آج ارم کی شلوار گیلی نہیں تھی..وہ سب سمجھتی تھی اور جانتی بھی تھی اور کرتی بھی تھی لیکن بھائی کے لن کے نیچے ہی رہیتی تھی..

اگلے پارٹ میں بتاؤں گا کیسے ارم کی پھدی میں پوری انگلی ڈالی اور گانڈ میں بھی آدھی انگلی ڈالی..

اب امی نے جو بچہ پیدا کیا تھا وہ بڑا ہو گیا تھا اور امی دوبارہ سکول جانا شروع ہوگئی تھی.

جب سے ارم کی پھودی میں میری آدھی انگلی گئی تھی تب سے میرا دل کر رہا تھا دوبارہ پوری انگلی ارم کی پھودی میں ڈالنےکوکیونکہ پہلے میں اپنی بہن کی پھودی میں صرف لن رگڑتا تھا لیکن جب میں نے ارم کی پھودی میں انگلی ڈالی تو پھدی اندر سے ٹائٹ تھی لیکن بہت نرم تھی جس وجہ سے مجھے ایک الگ مزے کا احساس ہو رہا تھاتبھی میرے دل میں خیال آیا کہ کیوں نہ ارم کی پھدی اور گانڈ کے اندر انگلیاں ڈالیں جائیں کیونکہ ارم ابھی لن بردارشت نہیں کر سکتی تھی.کچھ دنوں بعد مجھے رات کے وقت موقع مل گیا جب سب سوئے ہوئے تھے اور ہم بھی امی والے کمرے میں ہی سوئے ہوئے تھے.ارم میری ساتھ والی چارپائی پر لیٹی ہوئی تھی اور امی بچے کو اپنا دودھ پلا رہے تھی.میں نے امی کے بچہ پیدا کرنے سے پہلے کبھی بھی امی کے دودھ نہیں دیکھے تھے

میری امی کے دودھ 36 سائز کے تھے تقریباً اور نپل گول اور زیادہ موٹے نہیں تھے جوبچہ منہ میں لے کے بہت مزے سے چوستا تھا اور اسے چوستا ہوا دیکھ کر میرا لن کھڑا ہو جاتا تھا.امی نے بچے کو دودھ پلایا اور لائٹ آف کی اور سونے کے لئے لیٹ گئی. میں اور ارم باتیں کر رہے تھے اور ساتھ ساتھ میں بہانے بہانے سے کبھی ارم کی ٹانگ پرہاتھ پھیرتا اور کبھی گانڈ پر پھیرتا اور وہ اس کو نظرانداز کرتی اور مجھ سے باتیں کرتی رہی پھر اچانک ارم باتیں کرتی کرتی رک گی میں نے دو تین دفعہ آواز دی لیکن وہ نہ بولی میں سمجھ گیا کہ ارم اب بالکل تیار ہے.میں ارم کی شلوار نیچے کی اور ارم کی گانڈ کو چومنا شروع کر دیا.ارم کی گانڈ کو تھوڑی دیر چومنے کے بعد میں اس کی لائن میں زبان پھیرنا شروع کر دی اور ایک ہاتھ سے ارم کی پھودی کی لائن مسلنا شروع کر دی.تھوڑی دیر ارم کی گانڈ چاٹنے اور پھدی مسلنے پر ارم کی پھدی نے پانی چھوڑنا شروع کر دیا. ارم کی گیلی پھدی میں انگلی مسلنے سے جب بھی میری انگلی موری پرجاتی میں انگلی کا ایک سٹیپ موری میں ڈال دیتا جسے ارم آرام سے برداشت کر رہی تھی.اب میں نے ارم کے کان میں سیدھی لیٹنے کو کہا تو ارم سیدھی ہو کر لیٹ گئی اور میں نے اس کی ٹانگیں کھول کر اس کی پھدی چاٹنی شروع کردی. جب میری زبان موری بن جاتی تو گیلی اور نمکین پانی والی موری چاٹنے کا مزہ آجاتا. کافی دیر ارم کی پھودی چاٹنے کے بعد میں نے اپنا ایک ہاتھ اس کی قمیص کے نیچے سے اس کے دودھ تک لے گیا.ارم کے دودھ امی کی نسبت بہت چھوٹے ہیں اور ابھی ارم نے برا پہنی شروع نہیں کی تھی. ارم کے دودھ کے نپل بلکل چھوٹے تھے ان کو میں اپنی انگلیوں سے مسل رہا تھا اور ساتھ اس کی پھدی چاٹ رہا تھامجھے ارم کی بیچینی کا اندازہ ہو رہا تھا. میں ارم کی ٹانگیں تھوڑی اور کھولیں اور ارم کی پھدی میں دوبارہ انگلی مسلنا شروع کردی اور اس کی موری میں آہستہ آہستہ انگلی ڈالنا شروع کر دی اور ارم کی پھودی گیلی ہونے کی وجہ سے ہے انگلی پوری آرام سے پھدی کی موری کے اندر تک چلی گئی. اب میں اپنی سگی بہن کی پھودی میں انگلی سے آرام آرام سے جھٹکے ماررہا تھا اور اس کے پیٹ پر کس کر رہا تھا.پھر میں نے ارم کی پھودی میں انگلی کے جھٹکوں کی سپیڈ بڑھا دی اور اس دوران ارم نے اپنی ٹانگیں تھوڑی تھوڑی اکٹھی کرنا شروع کر دیں.ارم کی ٹانگیں اکٹھی کرنے سے مجھے لگا شاید اسے درد ہورہی ہیں لیکن ساتھ ہی ارم نے بہت سارا کرم گرم پانی موری سے چھوڑنا شروع کر دیا تو مجھے سمجھ آئی کہ وہ اپنی ٹانگیں مزے لے کر اکٹھا کر رہی تھی پانی نکالنے کے لیے…ارم کے پانی چھوڑنے کی وجہ سے پھودی میں انگلی کے جھٹکوں سے آواز آنا شروع ہوگئی جس کی وجہ سے میں انگلی باہر نکال دی تا کہ امی جھٹکوں کی آواز ان کر اٹھ نہ جائیں اور پھدی دوبارہ چاٹنا شروع کر دی اور ارم کی پھودی کا سارا پانی دوبارہ چاٹنے کے بعد ارم کے کان میں دوبارہ کہا کہ کروٹ لے کر لیٹو. ارم تھوڑی دیر میں کروٹ لے کر لیٹ گئی.ارم کی گانڈ کی موری بہت ٹائیٹ تھی.میں نے ارم کی ٹانگیں اکٹھی کی جس سے گانڈکی لائن کھل گئی اس کے بعد میرے کافی سارا تھوک ارم کی موری پے لگایااور گانڈ کی موری میں انگلی ڈالنے کی کوشش کی لیکن ارم نے موری ٹائٹ کرلی شائد ارم سمجھ چکی تھی کہ بھائی اب میری گانڈ میں ڈالناچاہتے ہیں.ارم کی گانڈ کی موری پر انگلی رکھ کر تھوڑا سا جھٹکا دیاتو آدھی انگلی ارم کی گانڈ میں چلی گئی اور انگلی اندر جاتے ہی ارم کے منہ سے چیخ نکل گئی اور ارم نے گانڈ ٹائٹ کر لی.میں جلدی انگلی باہر نکالی لیکن ارم کے چیخ مارنے سے امی اٹھ گئی اور انہوں نے آواز دے کر پوچھا ارم کیا ہوا تو ارم کہتی کچھ نہیں خواب میں ڈر گئی ہوں. امی جو کہ چار بچے پیدا کر چکی تھی سب سمجھ گئی کہ ارم کی یہ چیخ ڈر کی نہیں بلکہ درد کی تھی اس لئے انہوں نے مجھے بھی آواز دی لیکن میں چپ رہا اور یہی شو کروایا کہ میں سو رہا ہوں.ارم کے اس طرح بات بدلنے سے کنفرم ہو گیا کہ ارم اپنے بھائی کے نیچے کتنا خوش ہے. امی کے چپ ہونے کے تھوری دیربعد میں ارم کے کان میں کہا کہ میں تیل لے کے آتا ہوں اس سے درد نہیں ہوگی اگر تم راضی ہو تو شلوار اوپر مت کرنا.میں تیل لے کر واپس آیا تو ارم نے شلوار اوپر نہیں تھی کی جسکا مطلب تھا کہ ارم چاہتی کہ بھائی اس کی گانڈ کی موری میں بھی اپنی انگلی ڈالیں.میں ارم کی گانڈ کی موری میں کافی تیل لگانے کے بعد اپنی انگلی پر کافی تیل لگایا اور ارم کی موری میں ڈالنی شروع کی ابھی آدھی انگلی اندر گئی تو ارم نے اپنی گانڈ ٹائٹ کر لی لیکن اس دفعہ میں انگلی باہر نہیں نکالی اور ارم کے کان میں کہا کہ چیخ مت مارنا میں پوری اندر ڈالنے لگا ہوں اور میں ارم کے دائیں ہاتھ میں اپنا لنڈ پکڑایا اور ارم کی گانڈمیں پوری انگلی ڈالی تو ارم نے میرے لنڈ کو زور سے دبایا جس سے پتہ چلتا تھا کہ ارم کو پوری انگلی لیتے وقت درد ہو رہی ہے اب ارم نے میرے لن کو زور سے دبایا ہوا تھا اور میں اپنی سگی بہن کی گانڈ میں انگلی کے جھٹکے مار رہا تھا.مجھے اتنا مزہ آرہا تھا کہ ارم کی گانڈ میں انگلی کے جھٹکے مارنے اور ارم کے میرے لنڈ کو دبانے سے میں ارم کے ہاتھ کے اندر ہی لنڈ کا پانی نکال دیا.اب میں لن کا پانی نکالنے کے بعد ارم کی گانڈ ننگی چھوڑ کر اٹھ گیا.لیکن ارم اپنا لن کے پانی والا ہاتھ صاف کرنے کے لیے نہیں اٹھی شاید وہ میرا پانی اپنے ہاتھ سے چاٹ گئی.صبح ارم اٹھ کر اچھے موڈ سے مجھے ملیں اور اسکول چلی گئی..

دوستو اگلے پارٹ میں میں آپ کو بتاؤں گا کہ کیسے میں اپنی بہن کی گانڈ میں لن کی ٹوپی ڈالی اور اس کی زور سے ماری ہوئی چیخ سے پکڑا گی.

ارم نے امی کا ننگا جسم دودھ مجھے دکھائے اس کے بعد مجھے کنفرم ہوگیا کہ اب ارم لن لینے کے لیے بالکل تیار ہے اور وہ لن برداشت کر سکتی ہے.ویسے بھی ارم اپنی گانڈ کی موری میں لن لگتے ہیں پیچھے کو زور لگاتی ہیں تو میرا بہت دل کرتا ہے کہ اس دفعہ اس کی گانڈ میں لن ڈال دوں. ارم کے مینسز ختم ہونے کے کچھ دن بعد تقریبا دس دن بعد رات کو سوئے ہوئے میں ارم کے جسم پر ہاتھ پھیرنا شروع کر دیا جس سے ارم اٹھ گئی لیکن تھوڑا سا ہل کر پھر لیٹی رہی.مجھے یاد تھا کہ ارم کی گانڈ میں انگلی ڈالنے سے درد میں ہوئی تھی اس لیے میں اس دفعہ تیل اپنے ساتھ لے کر آیا تھالیکن اس دفعہ ارم کی گانڈ میں انگلی نہیں لن ڈالنا تھا.سب سوئے یوئے تھے. ارم ہاتھ پھیرنے سے اٹھ گئی اور میں اس کی شلوار نیچے کر لی تقریبا ٹانگوں کے اینڈ تک اور ارم کی قمیض اس کے دودھ تک اوپر کرکے اس کے پیٹ پر ہلکا ہلکا ہاتھ پھیرنے لگا اور ارم کے بازوؤں کے نیچے والی جگہ سونگھنے لگا وہاں کی خوشبو مجھے بہت پیاری لگ رہی تھی. اب میں ارم کے بازو کے نیچے اپنی زبان پھیر رہا تھا اور ساتھ اپنے ہاتھ سے ارم کے پیٹ اور پٹوں کو مسل رہا تھا ارم کی پھودی پر بال تھے.پھر میں نے ارم کی پھودی کے بال مسلتے ہوئے میں اپنی بہن کے دودھ کے نپلز منہ میں ڈال کر چوسنا شروع کر دیے. اب میں ارم کا ایک دودھ چوس رہا تھا اور دوسرے دودھ کا نپل اپنے ہاتھ سے مسل رہا تھا.میں نے ارم کے دودھ پینے کے دوران ارم کے کان میں بتا دیا تھا کہ آج میں اس کی گانڈ میں لن ڈالوں گا اس لئے تھوڑا درد برداشت کرنا.

اپنی بہن کے دودھ چوسنے کے بعد اب میں اپنی بہن کا پیٹ چوم رہا تھا اور اپنی بہن کی کنواری پھدی کے لمبے لمبے بال مسلسل رہا تھا اور اپنی بہن کی ٹانگوں پر ہاتھ پھیر رہا تھا.ارم بالکل سیدھی لیٹی ہوئی تھی میں ارم کی ٹانگیں تھوڑی اوپر کرکے سائیڈوں پر پھیلا دی اس سے میری بہن کی کنواری پھدی بلکل واضع کھل گئی اور ارم کی پھدی کی لائن میں آرام سے میری دو انگلیاں پھرنے لگی.تھوڑی دیر اپنی بہن کی پھودی مسلنے کے بعد اپنی بڑی انگلی اپنی سگی بہن کی ٹائٹ موری میں ڈال دی اور جٹکے مارنے لگا اور ساتھ ارم کی پھودی میں زبان سے ارم کی پھدی کا چھوڑا ہوا گرم گرم لیس دار پانی چاٹنے لگا.تقریبا دس منٹ اپنی بہن کی پھودی اور پانی چاٹنے کے بعد میں ارم کے کان میں الٹی ہونے کو کہا.ارم کو میں سجدہ والی پوزیشن میں کر کے کھلی گانڈ کی موری میں لن مسلنے لگا اور ارم کی گانڈ کی موری میں اپنا تھوک لگا کر چاٹنے لگا اور ساتھ ارم کی پھدی کا پانی انگلی پر لگا کر اپنے لن پر لگایا.

اپنی بہن کی کنواری پھدی کا لیس دار پانی اپنے لن پر لگاتے ہی میرا لن جٹکے کھانے لگا اور پانی کے قطرے نکلانے لگا جو میں ارم کی گانڈ کی موری پر لگا دیے..اب میری بہن کی گانڈ کی موری پر میرا تھوک اور ارم کی اپنی پھدی کا لیس دار پانی اور میرے لن کا پانی لگا ہوا تھا جس سے ارم کی گانڈ کی موری بہت چکنی ہو چکی تھی…میں ارم کی گانڈ کی موری میں ایک انگلی ڈالی جو ارم نے درد محسوس کروا کر اندر جانے دی پھر میں انگلی سے اپنی بہن کی گانڈ چودنے لگا..اور جب مجھے لگا ارم لن کے لیے تیار ہے تب میں ارم کی گانڈ کی موری میں کافی تیل لگایا جس سے انگلی آرام سے اندر باہر ہونے لگی تب میں ارم کی ٹانگیں سیدھی کر دی اور ارم کو الٹی کر دیا..کیونکہ میں اپنی بہن کو الٹی لٹا کر اوپر لیٹ کر لن ڈالنا چاہتا تھا تا کہ میرا پورا وزن ارم پر ہو اور جب میرا لن میری سگی بہن کی گانڈ کی سیل توڑے تو میری بہن درد سے ہل نہ سکے..پھر میں اپنے لن پر کافی تیل لگایا اور ارم کی گانڈ کھول کر موری پر لن کی ٹوپی رکھ کر مسلنے لگا..کافی مسلنے کے بعد ارم نے اپنی گانڈ کی موری کھولنی اور بند کرنی شروع کر دی اور یہی اشارہ تھا کہ ارم اب لن لینا چاہتی ہے..پھرمیں ارم کی گانڈ کی موری پر لن کی ٹوپی رکھ کر اس پر لیٹ گیا اور وزن ڈالنے لگا اور میرے وزن سے میرا لن میری بہن کے اندر جانے لگا..لن کی ٹوپی گانڈ کی موری میں جاتے ہی ارم نے آہاآہاآہاآہاآہاآہا آہاآہاآہاآہاآہاآہا کر کے بند آواز میں کراہنا شروع کر دیا لیکن میں رکا نہیں اور پروا وزن ڈال دیا اور تیل لگنے کی وجہ سے میرا پورا لن ارم کی گانڈ میں اتر گیا اور ارم نے منہ سے بے اختیار چیخ نکل گئی ہاۓےےےےےے امی جیییییییییییییی……. اور ارم رونے لگی..چیخ نکلتے ہی میں لن باہر نکال کر شلوار اوپر کر کے اپنے بستر پر لیٹ گیا لیکن امی اٹھ کر ارم کو اوز دی کہہ ارم کیا ہوا تو ارم نے کہا امی کچھ نہیں لیکن ارم کی آواز درد اور رونے کی وجہ سے کانپ رہی تھی تو امی اٹھ کر ارم کے پاس آئی اور پوچھا کیا ہوا تو ارم نے پھر کہا کچھ نہیں تو امی کہتے رو کیوں رہی ہو پھر تو ارم کہتی ویسے خواب میں ڈر گئی تھی..لیکن امی پوری تجربہ کار تھی جلدی سے ارم کی شلوار نیچے کی تو ارم کی گانڈ میں بہت سارہ تیل لگا دیکھ کر سمجھ گئی کہہ اس کا بھائی اس کی گانڈ مار رہا تھا لیکن ارم سے کہا یہ کیا ہے..لیکن ارم چپ رہی.مجھے بھی آواز دی لیکن میں چپ رہا.پھر امی غصے سے ارم کو کہا اس بارے میں صبح بات کروں گی تم دونوں سے.اور سونے چلی گئی…میں بھی لن صاف کیا اور سو گیا.

اگلے دن امی نے مجھے اور ارم کو کمرے میں بلایا اور میرے سامنے ہی ارم سے پوچھا بتاؤ رات کو کیا ہوا تھا تو ارم بولی امی کچھ بھی نہیں ہوا میں خواب میں ڈر گئی تھی امی نے کہا مجھے بچی مت سمجھو میں نے چار بچے پیدا کیے ہیں میں سب سمجھتی ہوں کہ ڈر کی چیخ کیسی ہوتی ہے اور درد کی چیخ کیسی ہوتی ہے.ارم نے کہا امی بھائی کو کیوں بلایا ہے بھائی آپ باہر جاؤ امی کو کہا میں آپ کو بتاتی ہوں کیا ہوا تھا.میرے باہر جاتے ہی امی نے ارم سے کھل کر پوچھا کہ اگر تیری چیخ درد سے نہیں نکلی تو تمہاری گانڈ میں تیل کیوں لگا ہوا تھا. ارم نے کہا امی میری گانڈ میں تیل لگنے کا درد سے اور بھائی سے کیا تعلق ہے کہیں آپ اس لئے بھائی کو اندر تو نہیں تھا بلوایا کہ آپ یہ سوچ رہی ہیں کہ کہیں بھائی میری گانڈ مار رہا تھا اس لئے میں چیخی.تو امی آگے سے ہنس کر کہا مجھے تو یہی شک ہوا تھا پھر ارم نے کہا امی آپ کیسے سوچ سکتی ہیں کہ بھائی اپنی بہن کی گانڈ مار سکتا ہے اس دن آپ نے کہا تھا بھائی اب جوان ہو گیا ہے وہ آپ کی پھدی نہیں دیکھ سکتا تو وہی بھائی ایک جوان بہن کے اندر کیسے لن ڈال سکتا ہے.تو امی نے کہا پھر تیری گانڈ میں تیل کیوں لگا ہوا تھا تو ارم نے کہا ضروری نہیں کہ بھائی گانڈ مارے تب ہی تیل لگا سکتی ہوں میں.مجھے گانڈ میں خارش تھی اس لیے تیل لگایا تھا.پھر امی چپ ہو گئ تو ارم نے کہا امی فرض کریں اگر بھائی کا لن میرے اندر جا سکتا ہے تو آپ کے اندر بھی تو جا سکتا ہے امی اسے ڈانٹ کر کہا چپ کر ماں کی بارے میں ایسا سوچتی ہوں کبھی ماں کی پھدی میں بیٹے کا لن جاتے دیکھا ہے تو پھر ارم نے کہا تو آپ نے کھبی بھائی کا لن بہن میں جاتے دیکھا ہے لیکن اگر بھائی کا لن بہن کے اندر جا سکتا ہے تو ماں کی پھدی باقی پھدیوں کی طرح ہے اس میں بھی تو بیٹے کا لن جا سکتا ہے نا..تب امی نے ہنس کر کہا کاش جب میں تیری شلوار نیچے کر کے تیری گانڈ دیکھی اس وقت تیرے بھائی کو بھی چیک کرتی تو ارم نے کہا امی آپ بھائی کی شلوار نیچے کرتی تو بھائی کا لن دیکھ کر شرم نہ آتی آپ کو.؟؟.ہاہاہاہا.امی نے کہا ارم چپ کرو تمہارا بھائی میری پھدی سے نکلا ہے اور اپنی پھدی سے نکلوانے والے بچے کا لن میں دیکھ سکتی ہوں..

تب ارم نے کہا امی یہ نا انصافی ہے کہ اپنی پھدی سے نکلوانے والے بچے کا لن تو آپ دیکھ سکتی ہیں لیکن دوسری طرف یہی کہتی ہے کہ بھائی آپ کی پھدی سے نکلے ہیں لیکن وہ آپ کی پھدی نہیں دیکھ سکتے اور ہنسنے لگی ہاہاہاہاہاہاہاہا.اس ساری گفتگو کے دوران ارم مجھے کافی دفعہ کھڑکی میں کھڑا دیکھ چکی تھی پھر ارم نے امی سے کہا امی آج رات میں دوبارہ اپنی گانڈ میں تیل لگانا ہے کیوں کہ میری خارش ابھی مکمل طور پر ختم نہیں ہوئی اس لیے آج شک مت کرنا اگر میں چیخ بھی پڑی تب بھی نہیں مجھے خواب میں رات کو بھی ڈر لگا تھا.ارم کے منہ سے یہ سنتے ہی میں سمجھ گیا کہ میری بہن آج رات پھر میرے لن کے نیچے آنا چاہتی ہے اور اپنی گانڈ میں میرا لن جڑ تک کرلینا چاہتی ہے.رات کو سب کے سونے کے بعد میں ارم کی چارپائی پر گیا ارم کروٹ لے کر لیٹی ہوئی تھی میں جاتے ہیں اپنی بہن کی شلوار نیچے کر کے اس کی کنواری گانڈ ننگی کردی اور ٹائم ضائع کیے بغیر اپنی بہن ارم کی گانڈ کی موری چاٹنی شروع کر دی.اور آج مجھے یقین تھا کے ارم روۓ گی نہیں کیوں کہ میری بہن کی گانڈ کی سیل رات کی ٹوٹ چکی تھی.اب میں اپنے لن پر ٹوپی سے لے کر ٹٹوں تک تیل لگایا اور ارم کی گانڈ کی لائن سے لے کر پھدی کی لائن تک لن مسلنے لگا.میرے لن مسلنے کے تھوڑی ہی دیر میں میری بہن کی کنواری پھدی سے گرم اور لیس دار پانی نکلنا شروع ہو گیا.اپنی بہن کا گرم اور لیس دار پانی میرے لن پر لگتے ہی میرا لن اور بھی ٹائیٹ ہو گیا اور اپنی بہن کے اندر جانے کے لیے جٹکے مارنے لگا پھر میں کافی تیل ارم کی گانڈ کی موری پر لگایا اور اپنی انگلیوں پر تیل لگا کر ارم کی گانڈ میں انگلی مارنا شروع کر دی.کافی دیر انگلیوں سے اپنی بہن کی گانڈ چودنے کے بعد جب مجھے محسوس ہوا کہ اب میری بہن لن لینے کے لیے بالکل تیار ہے تب میں ارم کو الٹا کیا اور اس کے اوپر الٹا لیٹ گیا اور اپنے لن کی ٹوپی ارم کی گانڈکی موری پرسیٹ کی.اب ارم کو پتہ چل چکا تھا کہ اب کچھ ہی سیکنڈ میں میرے سگے بھائی کا لن میرے اندر جانے والا ہے تو ارم نے اپنی گانڈ کی موری نرم کردی.جونہی ارم نے اپنی گانڈ کی موری نرم کی میرے اوپر وزن ڈالنے سے میرے لن کی ٹوپی ارم کی گانڈ میں پھسل کر چلی گئی اور ٹوپی اندر جاتے ہی ارم نے گانڈ کی موری ٹائٹ کرلی اور منہ سے آہ آہ آہ آہ نکلنے لگی لیکن دبی ہوئی آواز میں شائد منہ میں کپڑا لیا ہوا تھا.لیکن میں اپنی بہن کے گانڈ کی موری کو ٹائٹ کرنے کی پرواہ کیے بغیر پورا زور لگایا اور اپنا پورا لن اپنی سگی بہن کی گانڈ کی موری میں آخر تک ڈال دیا یہاں تک کے میرے لن کے ٹٹے ارم کی گانڈ کی لائن پر ٹکرانے لگے.جب میرا پورا لن میری بہن کی گانڈ میں جا رہا تھا تو میں اپنی بہن کے رونے کی آواز دبی ہوئی محسوس کر رہا تھا کہ جیسے ارم منہ میں کپڑا لے کر رو رہی ہو.لیکن میں ارم کے رونے کی پرواہ کیے بغیر ارم کی گانڈ میں جھٹکے مارنے شروع کر دیے. میں پورا لن ارم کی گانڈ سے باہر نکالتا اور ایک ہی جھٹکے میں اندر ڈال دیتا. کافی دیر تک اسی پوز میں اپنی بہن کی گانڈ چودنے کے بعد مجھے محسوس ہوا کہ آرم کو درد ہو رہی ہے پھر میں اپنے لن کا پانی اپنی بہن کی گانڈ کے اندر پہلی دفعہ نکالا اور اپنا لن باہر نکال کے ارم کی شلوار اوپر کی اور اپنی چارپائی پر لیٹ گیا.پھر میں اپنا لن صاف کیا اور سونے کی تیاری کرنے لگا لیکن ارم آرام سے لیٹی رہی اپنی گانڈ کے اندر تیل اور میرے لن کا پانی لئے ہوئے.. صبح ارم اٹھی تو امی نے اسے سکول جانے کے لیے کہا تو ارم نے کہا میری طبیعت ٹھیک نہیں اور ارم بیٹھتے ہوئے اور چلتے ہوئے درد محسوس کر رہی تھی جو کہ امی بالکل سمجھ گئی کیونکہ میری امی نے اپنی پھدی سے چار بچے نکلوائے تھے وہ سب سمجھتی تھی کہ عورت چدوانے کے بعد کیسا محسوس کرتی ہیں.امی پورا سمجھ گئی تھی کہہ رات کو ارم کے بھائی نے اس کو ٹھیک ٹھاک چودا ہے اس لئے امی ارم کے پاس ہو کر آہستہ آواز میں کہنے لگی کہ چلو طبیعت نہیں ٹھیک لیکن مجھے لگتا ہے کہ تمہاری گانڈ کی خارش ٹھیک ہو چکی ہے اب تمہیں تیل لگانے کی ضرورت نہیں پڑے ارم چپ کرکے لیٹی رہی.

کہانی آپ کو کتنی پسند آئی ؟

Click on a star to rate it!

Leave a Comment

Share to...